سعودی عرب نے پاکستان کا قومی خزانہ بھرنے کے لیے ناقابلِ یقین اعلان کر دیا

اسلام آباد معروف صحافی حامد میر نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی عرب پاکستان کی معیشت کو سہارا دینے کے لیے 8 سے 10 ارب ڈالر پاکستان کے اکاونٹ میں رکھے گا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان اور سعودی عرب کے برادرانہ اسلامی تعلقات کسی سے ڈھکے چھپے نہیں ہیں ۔۔سعودی عرب نے ہر مشکل حالت میں پاکستان کا نہ صرف ساتھ دیا بلکہ عملی اقدامات بھی کئیے ہیں۔
دوسری جانب پاکستان نے بھی ہر عالمی اور علاقائی معاملے پر سعودی حکومت کا ساتھ دیا ہے۔تاہم یمن فوجیں بھیجنے سے انکار پر برادار اسلامی ملک اور پاکستان میں معمولی خفگی پیدا ہو گئی تھی جس کے بعد سعودی حکومت پاکستان سے کچھ کھنچی کھنچی نظر آتی ہے۔ تا ہم پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات ابھی بھی مثالی ہیں لیکن کچھ عرصے سے سعودی حکام کا جھکاو پاکستان کی جانب نہیں ہے۔

تاہم جب سے تحریک انصاف کی حکومت قائم ہوئی ہے ،،پاکستان اورسعودی عرب میں نئے تعلقات کا آغاز ہونے جارہا ہے۔اس حوالے سے گزشتہ دنوں مشیر تجارت عبدالرزاق داود نے قوم کو خوشخبری سناتے ہوئے بتایا کہ پہلی مرتبہ سعودی عرب کی جانب سے بہت بڑی سرمایہ کاری کی نوید دی گئی ہے۔ پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نواف سعید المالکی کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے وفد نے اس بات کا اظہار کیا کہ وہ برادر اسلامی ملک پاکستان کے ساتھ ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر آگے بڑھنا چاہتے ہیں اورخواہش مند ہیں کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارت کو فروغ دینے کے مواقع تلاش کیے جائیں۔
اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ کہ سعودی عرب نے ایک مرتبہ پھر پاکستان کی مدد کے لیے بڑا قدم اٹھانے کی ٹھان لی ہے۔معروف صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے انکشاف کیا ہے کہ سعودی عرب نے پاکستانی معیشت کو سہارا دینے کے لیے اہم فیصلہ کرلیا ہے۔فیصلے کے مطابق سعودی عرب پاکستان کی معیشت کو سہارا دینے کے لیے 8 سے 10 ارب ڈالر پاکستان کے اکاونٹ میں رکھے گا۔یاد رہے کہ اس سے پہلے بھی سعودی عرب متعدد مواقعوں پر اس طرح کے دبنگ اقدامات کر چکی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں