کلثوم نواز کی نماز جنازہ سے قبل جاتی امراء سے اہم گرفتاری

لاہور: سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ آج شریف میڈیکل کمپلیکس کے گراؤنڈ میں ادا کی جائے گی۔ سابق خاتون اول کے انتقال پر شریف خاندان سے اظہار تعزیت کے لیے آنے والوں کا جاتی امرا میں تانتا بندھا ہوا ہے۔ جاتی امرا کے باہر مسلم لیگ ن کے کارکنان بڑی تعداد میں موجود ہیں اور اپنے قائد سے اظہار یکجہتی کر رہے ہیں۔
جاتی امرا کے باہر موجود کارکنان نے ایک موبائل چور بھی پکڑا۔ موبائل چور کارکنان اور جاتی امرا کے باہر موجود لوگوں کے موبائل اور نقدی چوری کرنے کی کوشش کر رہا تھا کہ اُسے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا گیا۔ ن لیگی کارکنان نے موبائل چور کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔یاد رہے کہ بیگم کلثوم نواز کا جسد خاکی پی آئی اے کی پرواز پی کے 758 سے لاہور لایا گیا۔

کلثوم نواز کی میت حج ٹرمینل سے جاتی امرا لے جائی گئی، اس موقع پر بیگم کلثوم نواز کا جسد خاکی پاکستان لانے کے لیے شہباز شریف کے ہمراہ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے اہل خانہ، نواز شریف کے صاحبزادوں حسن اور حسین نواز کے اہل خانہ، بیگم کلثوم نواز کی چھوٹی صاحبزادی اسما نواز بھی موجود تھے۔ والدہ کی آخری رسومات میں شرکت کے لیے ان کے صاحبزادے حسین اور حسن نواز پاکستان نہیں آئے۔
بیگم کلثوم نواز کا جسد خاکی شریف میڈیکل سٹی کے سرد خانے میں منتقل کیا گیا۔ بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ آج شام 5 بجے شریف میڈیکل سٹی کے گراؤنڈ میں ادا کی جائے گی۔ جس کے بعد بیگم کلثوم نواز کے ان کے سسر میاں شریف کے پہلو میں سپرد خاک کیا جائے گا ۔خیال رہے جاتی امراء رائےونڈ میاں نوازشریف کی رہائش گاہ اوراس کے ساتھ ہی ایک چھوٹا سا قبرستان بھی ہے جس میں دو قبریں میاں نوازشریف کے والد میاں شریف مرحوم اور میاں عباس شریف مرحوم کی ہیں اور اب اس چھوٹے سے قبرستان میں بیگم کلثوم نواز کو بھی سپرد خاک کیا جائے گا۔بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ تاخیر سے پاکستان پہنچنے پر نواز شریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر) کی پیرول پر رہائی میں پیر تک توسیع کر دی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں