پاکستانی کھلاڑیوں سے بد تمیزی کرنے والے راشد خان ”پاکستانی ‘ نکلے

لاہور پاکستان نے ایشیا کپ کے مرحلے سپر فور میں افغانستان کی ٹیم کو شکست دی تھی تاہم میچ کے دوران افغانستان کے باولر راشد خان پاکستانی بلے بازوں کے ساتھ انتہائی بدتمیزی سے پیش ہوتے ہوئے نظر آ ئے تاہم اب ان کی ایسے انکشافات ہوئے ہیں سن کر ہی پاکستانیوں نے پیروں تلے زمین نکل جائے گی اور ان انکشافات پر متعلقہ اداروں کی جانب سے ایکشن لینے کی بھی ضرورت ہے۔
تفصیلات کے مطابق افغان کرکٹر راشد آرمان شنواری ولد حاجی خلیل افغان صوبے ننگر ہار کے ضلع آچین کے گاﺅں پیخ پاس افغانستان کے علاوہ پاکستان کا شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بھی ہے۔اس نے پاکستانی شناختی کارڈ پر ہی اسلامیہ کالج میں تعلیم بھی حاصل کی ہے۔اس کے تمام بھائیوں حاجی عبدالحلیم، میاں حلیم، سید حلیم، گل رضا ، گل صباح اور جلیل نے بھی پاکستانی نادرا سے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بنوا رکھے ہیں۔

یہ خاندان پاکستان ہی کے شہر پشاور میں پاکستانی شناختی کارڈ اور پاسپورٹوں پر چین کے ساتھ الیکٹرانکس، ٹائر اور ریم کا کاروبار کرتے ہیں۔۔پاکستان کے شہر پشاور میں ان کے حیات آباد اور بورڈ میں کروڑوں روپے کے عالیشان بنگلے ہیں جن میں اس پورے خاندان کی رہائش ہے۔ اسی طرح انہوں نے پاکستانی وفاق کے زیر انتظام علاقے لنڈی کوتل مختارخیل میں قلعہ نما حویلی اور اس کے اندر کئی بنگلے بنا رکھے ہیں۔
بیرون ملک سفر کرنے کے لیے بھی یہ پورا خاندان پاکستانی پاسپورٹ ہی استعمال کرتا ہے۔راشد آرمان شنواری خود تسلیم کرتاہے کہ وہ آفغانستان کا شہری ضلع آچین پیخہ کا رہنے والا ہے ،میڈیا کی جانب سے سوال کیا رہا ہے کہ راشد خان کے خاندان کو کس نے اور کس قانون کے تحت پاکستانی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ جاری کر رکھے ہیں؟؟۔
مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں