حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار مبارک سے ایسی خطرناک چیز نکل آئی کہ دیکھ کر کسی کو اپنی انکھوں پر یقین نہیں آیا،تشویشناک دعویٰ کر دیا گیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)نابلوس اسرائیلی فوج نے یہ تشویشناک دعوٰی کر کے ہر کسی کو پریشان کر دیا ہے کہ حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار کو نقصان پہنچانے کے لئے کسی نے اس کے اندر بم نصب کر دیا تھا، جسے برآمد کر کے ناکارہ بنا دیا گیا ہے. یروشلم پوسٹ کے مطابق یہ ایک موبائل فون بم تھا. اسرائیلی سکیورٹی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ انہیں مزار

میں موجود موبائل فون بم کی اطلاع ملی تو ایک ٹیم کو اس بم کو ناکارہ بنانے کے لئے بھیجا گیا لیکن جب یہ اہلکار مزار میں داخل ہوئے تو وہاں موجود لوگوں نے ان پر پتھراؤ کیا. مزار دریائے اردن کے مغربی کنارے پر واقع شہر میں ہے اور اس کا انتظام فلسطینی اتھارٹی کے ہاتھ میں ہے. اس سے پہلے اکتوبر 2015ءمیں بھی ایک بار مشتعل مظاہرین اس مزار کی بے حرمتی کے ارادے سے یہاں حملہ کرچکے ہیں لیکن اس وقت فلسطینی پولیس نے مظاہرین پر بروقت قابو پالیا تھا. اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ مزار سے موبائل فون بم برآمد کرنے کے علاوہ اہلکاروں نے سلواد گاؤں میں ایک سرچ آپریشن کیا اور ہتھیار برآمد کئے. اس موقع پر کم از کم 11 افراد کو دہشتگردی میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار بھی کیا گیا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں